TRUE ISLAMI DOSTI FORUM

Best Online Entertainment Community


    ROZA TORNAY KA KAFARA

    Share
    avatar
    admin
    Admin
    Admin

    Posts : 154
    Join date : 2010-07-10
    Age : 29
    Location : PAKISTAN-AHMAD PUR EAST

    ROZA TORNAY KA KAFARA

    Post by admin on July 30th 2010, 11:15 am

    کسی مجبوری کے تحت اگر روزہ توڑاگیا ہے تواس کا کوئی کفارہ نہیں ہے اگرچہ کوشش یہ کرنی چاہیے کہ کسی اور دن اس کی قضا کرلی جاۓ البتہ جان بوجھ کر روزہ توڑ لیناایک بڑا گناہ ہے۔ اس طرح کی کوئی چیز آدمی سے سرزد ہوجاۓ تو بہتر ہے کہ وہ اس کا کفارہ ادا کرے۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اس کے لیے ایک شخص کو وہی کفارہ بتایاجو قرآن مجید نے ظہار کے لیے مقرر کیا ہے- تاہم روایت سے واضح ہے کہ جب اس نے معذوری ظاہر کی تو آپ نے اس پر اصرار نہیں کیا۔ظہار کا کفارہ درج ذیل ہے:
    ایک لونڈی یا غلام آزاد کیا جاۓ۔
    وہ میسر نہ ہو تو مسلسل دومہینے کے روزے رکھے جائیں۔
    یہ بھی نہ ہوسکے تو ساٹھ مسکینوں کو کھانا کھلایا جاۓ۔

      Current date/time is December 12th 2017, 12:44 am